Sunday , July 22 2018
Home / Hajj and Umrah News / Hajj Quota Issue 2018 – MORA Submitted Appeal in Islamabad High Court (IHC)

Hajj Quota Issue 2018 – MORA Submitted Appeal in Islamabad High Court (IHC)

Hajj Quota Issue 2018 – MORA Submitted Appeal in Islamabad High Court (IHC)

Today ministry of religious affairs (MORA) has submitted an appeal in Islamabad High Court. In this appeal the MORA has requested honorable court to issue stay order against the hajj quota case announced two week ago. MORA has requested to reinstate the Government hajj quota at 67% as approved in Hajj policy 2018.

Previous Judgement of IHC about Hajj Quota 2018

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کا حج قرعہ اندازی میں تاخیر پر تحفظات کا اظہار

اسلام آباد (این این آئی)قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور نے حج قرعہ اندازی کے عمل میں مسلسل عدالتی حکم امتناعی پر سخت تحفظات کا اظہار کردیا۔گزشتہ روز رکن اسمبلی شگفتہ جمانی کی زیر صدارت کمیٹی کے اجلاس میں بتایا گیا کہ حکومت نے کل حج کی نشستوں میں سے 67 فیصد سرکاری سکیم کے تحت مختص کیں جبکہ 33 فیصد نجی سیکٹر کے پاس ہے۔اس حوالے سے کمیٹی اور وزارت مذہبی امور ایک پیج پر نظر آئیں کہ سرکاری سکیم کے تحت زیادہ سے زیادہ کوٹہ مختص کرنا چاہیے کیونکہ اس سے عوام کو سہولت ملی ہے۔وزارت مذہبی امور کے جوائنٹ سیکرٹری طاہر خان کے مطابق سندھ ہائی کورٹ کے سکھر بینچ نے حج قرعہ اندازی پر پابندی لگائی جبکہ لاہور ہائی کورٹ نے ملک کیلئے مختص کل نشستوں میں سے 50 فیصد تک پر پابندی عائد کی۔

قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں وزیر مذہبی امور سردار محمد یوسف نے کہا کہ سپریم کورٹ میں دائر اپیل کے بعد عدالت عظمیٰ کی اجازت

Hajj Quota Case 2018
Hajj Quota Case 2018

سے 50 فیصد نشستوں کی حج قرعہ اندازی کی گئی جبکہ ہم نے درخواست کی ہے کہ حکومتی سکیم کی بقیہ 17 فیصد کی قرعہ اندازی کی اجازت دی جائے۔ 67 فیصد تعداد کی منظوری نہ صرف کابینہ نے دی بلکہ قومی اسمبلی کی کمیٹی کی جانب سے اس کی تجویز دی گئی تھی ٗان کا کہنا تھا کہ حج قرعہ اندازی میں تاخیر سے مسائل پیدا ہورہے ہیں، جس میں ایک اہم مسئلہ حاجیوں کی تربیت کا ہے۔اجلاس کے دوران تحریک انصاف کے رکن علی محمد خان نے کہا کہ ہم عدالتوں کا احترام کرتے ہیں لیکن پالیسی فیصلے حکومتی اختیار ہوتا ہے اور عدالتوں کی جانب سے حکم امتناعی ان کے مینڈیٹ کو کمزور کرتے ہیں۔اس موقع پر کمیٹی کی جانب سے مذہبی اقلیتوں کے کمشن کے قیام سے متعلق 3 مختلف بلوں پر بھی غور کیا گیا جبکہ یہ بلز اراکین اسمبلیوں کی جانب سے پیش کیے گئے۔اس دوران ایک رکن لال چند مالہی کی جانب سے کمیٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا گیا کہ 2015 سے اس معاملے کو ملتوی کیا جارہا ہے اور جب بھی وہ بل پیش کرتے ہیں تو کوئی فیصلہ نہیں کیا جاتا۔

Check Also

Biometric Verification for Pakistani Hujjaj this year - How to Make possible

Biometric Verification of Pakistani Hujjaj-e-Karam from Etimad Company 

Biometric Verification of Pakistani Hujjaj-e-Karam from Etimad Company Centers Saudi Arabia Government has made the …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.